ہفتہ , 8 اگست 2020
ensdur

Wusatullah Khan

مغل اعظم اور پانچ اگست | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان اس پانچ اگست کو بابری مسجد کے ملبے پر رام مندر کی بنیاد رکھی گئی۔پچھلے پانچ اگست کو ڈوگرہ ریاست جموں و کشمیر کی نیم خود مختارانہ آئینی بنیاد اکھاڑ دی گئی۔مگر آج سے ساٹھ برس پہلے پانچ اگست انیس سو ساٹھ کو مغلِ اعظم ریلیز ہوئی۔برصغیر کی فلمی تاریخ میں اس سے پہلے اور نہ …

مزید پڑھیں »

ایک سال مکمل ہو گیا | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان گذشتہ برس نومبر کے تیسرے ہفتے میں نیویارک میں کشمیری پنڈتوں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی قونصل جنرل سندیب چکرورتی نے فرمایا ،’’ میرے خیال میں ( کشمیر میں ) امن و امان کی صورت بہتر ہو رہی ہے۔آپ جلد ہی واپس لوٹ سکیں گے کیونکہ آپ کے تحفظ کے لیے پہلے ہی سے …

مزید پڑھیں »

شکر کہ عمرِ عزیز کا ہاتھی نکل گیا | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان کوئی بہت زیادہ پرانی بات نہیں۔ بیس پچیس برس اًدھر کا قصہ ہے (چوتھائی صدی یوں نہیں کہہ رہا کہ بہت لمبا زمانہ نہ لگے)۔ یہ تب کی بات ہے جب خواندہ طبقات کی روزمرہ گفتگو میں سیاست پہلے نمبر سے دسویں نمبر تک نہیں چھائی رہتی تھی۔ بلکہ سیاست اگر بحث کے پہلے پائیدان پر …

مزید پڑھیں »

اب عالم ِ اسلام مریخ پر | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ عالمی بینک، بین الاقوامی مالیاتی فنڈ، ایشین ڈویلپمنٹ بینک سمیت سرکردہ مالیاتی اداروں کی سرخ بتی مسلسل روشن ہے۔ اب تک بفضلِ کورونا عالمی معیشت تین فیصد تک سکڑ چکی ہے۔ آگے کی بحرانی سرنگ کتنی طویل ہے کوئی نہیں جانتا۔ حتی کہ ٹرمپ جو باقی سب جانتا ہے مگر نہیں جانتا کہ نومبر کے صدارتی انتخابات …

مزید پڑھیں »

بدھا کا مجسمہ توڑنے والوں کا کیا قصور ؟ | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان اگر گزشتہ ہفتے مردان کی تحصیل تخت بائی میں ایک مکان کی کھدائی کے دوران ٹھیکیدار کو مہاتما بدھ کا قدِ آدم  سنگی مجسمہ نہ دکھائی دیتا اور وہ کسی متعلقہ سرکاری اہل کار کو اس کی اطلاع دینے کے بجائے ایک مقامی مولوی کو جائے وقوع پر نہ لے آتا اور وہ مولوی فوری طور …

مزید پڑھیں »

یہ کنارہ چلا کہ ناؤ چلی | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان ب سے بارہ روز پہلے ( چھ جولائی ) ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے اشارہ کیا کہ چین کے ساتھ ایک پچیس سالہ ساجھے دار سمجھوتے کو آخری شکل دی گئی ہے۔ حسن اتفاق سے اس معاہدے کی حتمی نقل کے اٹھارہ صفحات بھی فوراً میڈیا کے ہتھے چڑھ گئے۔ اگر یہ صفحات اصلی ہیں …

مزید پڑھیں »

ہوشیار ! کہیں علم کا وائرس نہ پھیل جائے | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان قبل از ضیا دور میں جیسی کیسی بھی تاریخِ عالم و تاریخِ برصغیر نچلے تعلیمی اداروں میں پڑھائی جاتی تھی، اب اس کی تدریس بھی عنقا ہے۔ اس زمانے میں میٹرک تک ہر بچے کو تاریخ کا مضمون پڑھایا جاتا،  بھلے یہ بچہ سائنس کا طالبِ علم ہو یا آرٹس کا۔یوں ہر بچے کو ماضی کے …

مزید پڑھیں »

آیا صوفیہ، ارطغرل، مسجد قرطبہ | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان اگلے ہفتے ترکی کی اعلیٰ عدالت استنبول کے آیا صوفیہ میوزیم کو دوبارہ مسجد میں تبدیل کرنے کی سرکاری درخواست پر فیصلہ سنانے والی ہے۔ آیا صوفیہ ڈیڑھ ہزار برس پرانی عمارت ہے اور پانچ سو سینتیس عیسوی میں مشرقی سلطنت روم کے شہنشاہ جسٹینین نے دارالحکومت قسطنطنیہ کے شایان شان بطور گرجا تعمیر کروائی۔ نو …

مزید پڑھیں »

ہجوم بڑا کہ آئین؟ | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان وزارتِ مذہبی امور کا کہنا ہے کہ وہ اپنے قواعد و ضوابط کے مطابق کسی نئی عبادت گاہ کی تعمیر کے لیے پیسے نہیں دے سکتی البتہ پہلے سے قائم عبادت گاہوں کی دیکھ بھال ، مرمت اور تزئین و آرائش کے لیے مدد کر سکتی ہے۔نیز حکومت کو فلاحی کاموں کے لیے مختص قطعاتِ اراضی …

مزید پڑھیں »

بغیر منبر والے طالب جوہری! | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان اکتوبر 1991، شمالی لندن۔ بی بی سی کی نوکری اختیار کیے پانچ ماہ گزر گئے۔ اس دوران میرا صرف ایک گھر میں آنا جانا کھانا پینا تھا۔ جعفر بھائی اور فیروزہ جعفر عرف بجیا کا گھر۔ جعفر بھائی نے ایک دن پوچھا ارے کراچی میں ہمارے ایک بھتیجے بھی رہتے ہیں طالبِ جوہری، کبھی ان سے …

مزید پڑھیں »