جمعرات , 29 اکتوبر 2020
ensdur

ہماری جدوجہد عمران خان کے خلاف نہیں، اسے لانے والوں کے خلاف ہے، نواز شریف

پاکستان کے وفاقی دارالحکومت میں ملک کی حزب اختلاف کی سیاسی جماعتوں کی حکومت مخالف آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے رہنما نواز شریف کا کہنا ہے کہ ہماری جدوجہد عمران خان سے نہیں، اسے لانے والوں کے خلاف ہے، ملک میں جمہوریت کمزور ہو گئی ہے اور عوام کی حمایت سے کوئی جمہوری حکومت بن جائے تو کیسے ان کے خلاف سازش ہوتی ہے اور قومی سلامتی کے خلاف نشان دہی کرنے پر انھیں غدار قرار دے دیا جاتا ہے۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سابق وزیر اعظم یوسف گیلانی نے کہا تھا ’ملک میں ریاست کے اندر ریاست ہے‘۔ لیکن اب معاملہ ریاست سے بالاتر ریاست تک پہنچ گیا ہے۔

اس کانفرنس کی میزبان جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے ابتدائی خطاب کرتے ہوئے تمام شرکا اور خصوصاً مسلم لیگ ن کے رہنما نواز شریف کا اس کانفرنس میں شرکت کرنے پر شکریہ ادا کیا۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ ہم صرف حکومت گرانے کے لیے نہیں ملے ہیں۔ ہم حکومت نکال کر جمہوریت بحال کرکے رہیں گے۔ میثاق جمہوریت سے ہم آہنگی پیدا کی تھی۔ شرکاء اے پی سی میں مشترکہ لائحہ عمل اختیار کریں۔ ہم نے کوشش کی دو سال میں جمہوریت بچے۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

وزیراعظم عمران خان کی آرمی چیف سے ملاقات

وزیراعظم عمران خان سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملاقات کی ہے، جس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے