منگل , 13 اپریل 2021
ensdur

پیپلز پارٹی نے ملیر اور سانگھڑ میں میدان مارلیا، مخالفین کی ضمانتیں ضبط

سندھ اسمبلی کے  دونوں حلقوں کے ضمنی انتخاب میں پیپلزپارٹی کے امیدوار بھاری اکثریت سے کامیاب ہوئے اور باقی تمام امیدواروں کی ضمانت ضبط ہوگئیں ۔

رات گئے تک ملنے والے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 43 سانگھڑ 3 کے ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی کے جام شبیر علی خان 48 ہزار سے زائد ووٹ لیکر بھاری اکثریت سے کامیاب ہوئے اور تحریک انصاف کے مشتاق 6ہزار 925ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر رہے۔

تحریک انصاف کے مشتاق سمیت ہارنے والے تمام امیدواروں کی ضمانت ضبط ہوگئی ہے۔ یہ نشست پیپلزپارٹی کے جام مددعلی خان کے کورونا میں انتقال سے خالی ہوئی تھی اور جام شبیر علی خان جام مدد علی خان مرحوم کے چھوٹے بھائی ہیں۔

سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 88 ملیر کراچی کی نشست پیپلزپارٹی کے صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ کے کورونا میں انتقال کے باعث خالی ہوئی ۔ ضمنی انتخاب کے لئے 20 امیدوار مدمقابل تھے ۔

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق پیپلز پارٹی کے محمد یوسف بلوچ 22ہزار سے زائد ووٹ لیکر بھاری اکثریت سے کامیاب ہوگئے ہیں ،تحریک انصاف کے جان شیر جونیجو 5 ہزارووٹ کے ساتھ دوسرے ، تحریک لبیک پاکستان کے سید کاشف علی شاہ 4 ہزارو وٹ کے ساتھ تیسرے اور ایم کیوایم پاکستان کے ساجد احمد 3 ہزارو وٹ کے ساتھ چوتھے نمبر پر رہے ۔

کامیاب امیدوار کے سوا باقی تمام امیدواروں کی ضمانت ضبط ہوگئی ہے۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

پیپلزپارٹی نے پی ڈی ایم عہدوں سے استعفے مولانا فضل الرحمن کو بھجوا دیئے

پیپلز پارٹی نے اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم سے علیحدگی کے فیصلے پر مرحلہ وار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے