منگل , 19 جنوری 2021
ensdur

نعیم بخاری کی بطور چیئرمین پی ٹی وی تعیناتی پر عدالت نے سوال اٹھا دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نےنعیم بخاری کی بطورچیئرمین پی ٹی وی تعیناتی پر سنجیدہ سوال اٹھا دیا اور قرار دیا کہ نعیم بخاری کی تعیناتی بادی النظرمیں سپریم کورٹ کے فیصلے کیخلاف ورزی ہے۔

منگل کوچیئرمین پی ٹی وی کی تعیناتی کیخلاف درخواستوں پرسماعت کے دوران عدالت نے نعیم بخاری کو سپریم کورٹ کا فیصلہ پڑھنےکا حکم دیا۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئےکہ سپریم کورٹ کا بڑا واضع فیصلہ ہے اوراس پرعمل بھی ضروری ہے،نعیم بخاری ہمارے لیے قابل احترام ہیں لیکن عدالتی فیصلہ نظرانداز نہیں کرسکتے۔

وکیل چئیرمین پی ٹی وی نے کہا کہ حکومت کو اختیارہے کہ وہ پرائیویٹ ڈائریکٹر تعینات کرسکتی ہے۔اس پرچیف جسٹس نے کہا کہ آپ فیصلہ پڑھ لیں، اس میں عمر کی حد کا ذکر بھی موجود ہے۔

وکیل نے جواب داخل کرنے کیلئے مہلت کی استدعا کی جس کے بعدعدالت نے کیس کی سماعت 14 جنوری تک ملتوی کرتے ہوئے اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کو آئندہ سماعت پر عدالتی معاونت کی ہدایت کردی۔عدالت نےسیکرٹری وزارت اطلاعات ونشریات کے مجاز افسرکو بھی طلب کرلیا ہے

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

پی ڈی ایم کا پی ٹی آئی فنڈنگ کیس کے فیصلے میں تاخیر پر الیکشن کمیشن کے سامنے بھرپور پاور شو

پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کے فیصلے میں تاخیر پر پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے