جمعرات , 4 مارچ 2021
ensdur

نجی کمپنیوں کو کورونا ویکسین درآمد کرنے کی اجازت، کمپنیاں ویکیسن کی قیمت کے تعین میں آزاد ہوں گی

پاکستان نجی کمپنیوں کو کورونا وائرس کی ویکسین درآمد کرنے کی اجازت دے گا اور درآمدی ویکسین کی قیمت کے تعین میں آزاد ہوں گی۔

غیرملکی خبر رساں ادارے ‘رائٹرز’ نے دستاویزات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ درآمدی ویکسین پر قیمت سے متعلق کسی بھی پالیسی کا اطلاق نہیں ہوگا۔

دستاویزات میں کہا گیا کہ نیشنل ہیلتھ سروسز، ریگولیشنز اور کوآرڈینیشن ڈویژن نے کابینہ سے درآمدی ویکسین کو قیمت سے متعلق پالیسی سے خارج کرنے کی اجازت مانگی ہے۔

خیال رہے کہ ملک میں درآمدی ادویات پر قمیت سے متعلق پالیسی کا اطلاق ہوتا ہے۔

علاوہ ازیں وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے بھی رائٹرز کو کابینہ کے فیصلے کی تصدیق کی۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ پاکستان کا ویکسین مفت لگانے کا ارادہ ہے اور ایک ‘محدود تعداد’ جو ویکسین کی ادائیگی کرنا چاہتی ہے اس کے لیے اوپن مارکیٹ موجود ہے۔

انہوں نے کہا کہ جو لوگ نجی شعبے سے ویکسین لینا چاہیں تو کچھ بھی ادا کریں۔

ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ ‘ذاتی طور پر میرا اندازہ یہ ہے کہ جب ویکسینیں دستیاب ہوں گی اور ہمارا مارکیٹ میں مقابلہ ہوگا تو یہ قیمتیں خود بخود طے ہوجائے گی’۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

یوسف رضا گیلانی کو چیئرمین سینیٹ منتخب کرائیں گے: بلاول بھٹو زرداری

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے