ہفتہ , 31 اکتوبر 2020
ensdur

مریم نواز کی نیب پیشی: پولیس اور کارکنوں میں جھڑپیں، مریم نے واقعہ ریاستی دہشتگردی قراردیدیا

مریم نواز کی پیشی کے موقع پر نیب لاہور آفس کے باہر میدان جنگ کا منظر رہا۔ لیگی کارکنوں کی پولیس سے جھڑپیں، بیریئر توڑنے کی کوشش اور پتھراؤ، منتشر کرنے کیلئے پولیس کی ہوائی فائرنگ اور شیلنگ، مار کٹائی کے بعد پکڑ دھکڑ، خواتین سمیت کئی مظاہرین گرفتار کر لئے گئے۔

تفصیل کے مطابق نیب آفس کے باہر تصادم کی صورتحال اس وقت پیدا ہو گئی جب ن لیگی کارکنوں نے اپنی قائد مریم نواز کے ہمراہ اندر جانے کی کوشش کی۔ جس پر وہاں پر موجود اینٹی رائڈ فورس کے اہلکاروں نے انھیں منتشر کرنے کی کوشش کی۔

اس پر نیب آفس کے باہر موجود کارکنوں کی بہت بڑی تعداد مشتعل ہو گئی اور انہوں نے پولیس اہلکاروں پر پتھراﺅ شروع کردیا۔ اس کے جواب میں پولیس نے ن لیگی کارکنوں پر لاٹھی چارج کرتے ہوئے آنسو گیس کے شیل پھینکے۔

پولیس اور لیگی کارکنوں کے درمیان تصادم کا سلسلہ تقریباً ایک گھنٹے تک جاری رہا۔ پولیس کے پتھراﺅ سے ن لیگی رہنماﺅں سمیت درجنوں کارکن زخمی ہوگئے جنہیں فوری طبی امداد کے لئے ہسپتال منتقل کیا گیا۔ کشیدہ صورتحال پر پاکستان مسلم لیگ ن کی خاتون رہنما مریم نواز پیشی کے بغیر ہی واپس لوٹ گئیں۔

واضح رہے کہ نیب لاہور نے مریم نواز کو جاتی امراء میں 200 ایکڑ اراضی کی خریداری کے متعلق انکوائری کے لئے طلب کر رکھا تھا۔ تصادم سے قبل مریم نواز جاتی امرا سے کارکنوں کے ایک بڑے قافلے کی قیادت کرتے ہوئے نیب آفس کے باہر پہنچیں تو وہاں پر پہلے سے موجود ن لیگی کارکنوں کی ایک بہت بڑی تعداد نے مریم نواز کا پرتپاک استقبال کرتے ہوئے ان کی گاڑی پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

گلگت بلتستان، نوید انقلاب | آفتاب احمد گورائیہ

تحریر: آفتاب احمد گورائیہ گلگت بلتستان اپنے دیو مالائی حُسن، برف پوش چوٹیوں، خوبصورت وادیوں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے