منگل , 22 ستمبر 2020
ensdur

مالی سال کے آغاز پر ہی مہنگائی کی شرح میں بےتحاشہ اضافہ، سبزیوں کی قیمتوں میں 24 فیصد تک اضافہ

محکمہ شماریات کے مطابق جون کے مقابلے جولائی کے مہینے یعنی مالی سال کے آغاز پر مہنگائی کی شرح میں 2.50 فیصد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جس کے بعد پاکستان میں مہنائی کی شرح 9.3 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

گزشتہ ماہ میں سبزیوں کی قیمتوں میں نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس میں پیاز کی قیمت میں16.6 فیصد اور ٹماٹر کی قیمت میں 179فیصد اضافہ ہوا۔ جبکہ مجموعی طور پر سبزیوں کی قیمتوں میں 23.8 فیصد اضافہ ہوا۔

جولائی ہی کے مہینے میں ماہانہ بنیاد پر انڈے 10.8، مصالحہ جات 7.5 فیصد، گندم 7.4، آلو 4.5 فیصد گوشت 3.9، چینی 3.8 فیصد اور لوبیا 3 فیصد مہنگا ہوا۔

دوسری جانب موٹر فیول 27 فیصد مہنگا ہوا، سالانہ بنیاد پر دیکھا جائے تو جولائی میں شہری علاقوں میں ٹماٹر 100 فیصد آلو 63 فیصد، دال مونگ 46.25 فیصد، انڈے 43.11 فیصد، مرغی 36.69 فیصد ، گندم 29 فیصد، سبزیاں 18 فیصد اور کپڑوں میں 11 فیصد مہنگی ہوئی۔

جولائی میں سالانہ بنیاد پر چینی 17 فیصد مہنگی ہوئی جب کہ آٹا 18.52 فیصد مہنگا ہوا۔ جون 2020 میں منہگائی کی شرح 8.6 فیصد تھی جب کہ گزشتہ برس جولائی میں مہنگائی کی شرح 8.4 فیصد تھی۔

ادارہ شماریات کے سروے کے مطابق اس ڈیٹا میں 35 شہروں میں 356 اشیائے خورونوش و دیگر چیزوں کا موازنہ کیا گیا ہے۔ جبکہ دیہی علاقوں میں 27 نمایاں مقامات سے 244 اشیائے خورونوش و دیگر کا ڈیٹا مرتب کیا گیا ہے۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

نواز شریف اتنے بھی “بھولے” نہیں | نصرت جاوید

بسااوقات واقعتا گھبرا جاتا ہوں۔ چند مہربان پڑھنے والے بہت اشتیاق سے اہم ترین سیاسی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے