ہفتہ , 17 اپریل 2021
ensdur

طلباء کی مشکلات میں اضافہ: سیکنڈ ہینڈ کمپیوٹر، لیپ ٹاپ کی قیمتوں میں ریکارڈ اضافہ

استعمال شدہ درآمدی کمپیوٹر، لیپ ٹاپ، پرنٹر اور دیگر اشیاء کی کسٹم ڈیوٹی میں ریکارڈ 500فیصد تک اضافہ ہوگیا۔

پرانے لیپ ٹاپس اور کمپیوٹرز پر 500فیصد کسٹم ڈیوٹی عائد ہونےکے باعث طلباء کے لیے مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔

خریدار طالبعلم کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی اسٹوڈنٹ ہوں سارا کام لیپ ٹاپ پر ہوتا ہے، اسائنمنٹ بنانا آن لائن کلاسز لینا مگر یہاں مارکیٹ میں تمام الیکٹرانک کا سامان میرے بجٹ آؤٹ ہے جبکہ میں تو کوئی بھی لیپ ٹاپ نہیں خرید سکتا۔

دوسری جانب تمام ٹیکنالوجی کی اشیاء پر بھاری ٹیکسز نے کمپیوٹر مارکیٹ کی رونقیں ہی چھین لی ہیں۔

فیصل آباد کی صدر کمپیوٹر مارکیٹ کے دکاندار غلام حسین نے بتایا کہ پہلے کبھی اتنا اضافہ نہیں ہوا، جو چیز پہلے 15ہزار میں ملتی تھی اب اس پر اتنی کسٹمز ڈیوٹی لگادی گئی ہے کہ اس سامان مالیت 50ہزار تک پہنچ چکی ہے. دکاندار نے مزید کہا کہ چیزین مہنگی ہونے کے باعث خریدار نہ ہونے کے برابر ہیں۔

دوسری جانب الیکٹرانک سامان میں پرنٹر، کی بورڈ، ایل سی ڈی کی قیمتوں میں بھی 10ہزار روپے تک اضافہ ہوگیا ہے۔

ایک جانب پاکستان کو انفارمیشن ٹیکنالوجی سے ہمکنار کروانے کے بلند و بالا دعوے کیے جارہے ہیں دوسری جانب لیپ ٹاپ اور کمپیوٹرز سمیت تمام اشیاء کی قیمتوں پر لگائے گئے ظالمانہ ٹیکس نوجوان نسل کو جدت کے اس دور میں بھی تاریکی میں دھکیل رہا ہے۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

محکمہ داخلہ نے کالعدم ٹی ایل پی کے سربراہ سعد رضوی کا شناختی کارڈ بلاک کردیا گیا

کالعدم تنظیم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی)کے سربراہ سعد رضوی کا شناختی کارڈ بلاک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے