اتوار , 20 ستمبر 2020
ensdur

طاہر داؤڑ کو پاکستان کے خفیہ اداروں نے قتل کروایا: احسان اللہ احسان کا الزام

تحریکِ طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان نے دعویٰ کیا ہے کہ اسلام آباد سے قریب دو سال قبل اغوا ہونے کے بعد قتل ہو جانے والے پولیس افسر طاہر داؤڑ کو پاکستان کے خفیہ اداروں نے پشتون تحفظ تحریک کی حمایت پر قتل کروایا۔

لیاقت علی عرف احسان اللہ احسان نے اپنے بیان میں کہا کہ 25 اکتوبر 2018 کو طاہر داؤڑ کو ایک خفیہ اجلاس کے بہانے سے بلا کر اغوا کر لیا گیا اور ایک گاڑی میں ڈال کر انہیں خیبر کے راستے افغان سرحد پر منتقل کر دیا گیا جہاں انہیں ایک شدت پسند کمانڈر عثمان کے حوالے کیا گیا جس کا تعلق لنڈی کوتل سے ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ دہشتگرد عثمان کو ہدایات دی گئی تھیں کہ طاہر داؤڑ کو افغانستان لے جا کر قتل کر دیا جائے اور لاش کو کسی ایسی جگہ پھینکا جائے کہ جس سے یہ تاثر ملے کہ انہیں داعش نے قتل کیا۔

عثمان نے طاہر داؤڑ کو ننگرہار کے ضلع مہمند درہ کے علاقے غورکے منتقل کیا جہاں ان کا مرکز واقع تھا، طاہر داؤڑ کو دو دن یہاں رکھا گیا اور اڑتالیس گھنٹے کے بعد ان کو قتل کر کے ان کی لاش ’دور بابا‘ کے علاقے میں پھینک دی گئی اور اس لاش کے ساتھ پشتو میں ایک خط بھی رکھ دیا گیا جس پر آخر میں ’ولایت خراسان‘ لکھا تھا۔ ایسا احسان اللہ احسان کے مطابق اس لئے کیا گیا تاکہ دیکھنے والوں کو یہ تاثر دیا جا سکے کہ یہ کام داعش خراسان نے کیا ہے۔

احسان اللہ احسان مزید لکھتے ہیں کہ داعش ایسے کام نہیں کرتی، یہ اگر کسی کو قتل کرتی ہے تو اس کا اعلان کرتی ہے اور اعلانیہ اس کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔

احسان اللہ احسان نے الزام لگایا کہ طاہر داؤڑ کو قتل کرنے کی وجہ ان کا پی ٹی ایم کے لئے نرم گوشہ ہونا تھا۔ ان کے بعد دو مزید افسران کو اسی لئے قتل کیا جانا تھا لیکن طاہر داؤڑ کے قتل پر آنے والے رد عمل کے بعد یہ منصوبہ مؤخر کر دیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ ان دونوں افسران کو ڈیتھ سکواڈ کے ذریعے قتل کروایا جائے گا اور بعد ازاں اسے دہشتگردی کی کارروائی قرار دے کر معاملہ رفع دفع کر دیا جائے گا۔

یاد رہے کہ احسان اللہ احسان چند ماہ قبل پاکستانی اداروں کی حراست سے بھاگ نکلے تھے اور انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ اب ترکی میں ہیں۔ ان کے ان تازہ ترین الزامات کی حکومت کی جانب سے کوئی تصدیق یا تردید نہیں کی گئی ہے۔

بشکریہ نیا دور

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

میثاق جمہوریت ۔ 2 کی ضرورت

تحریر: سید مجاہد علی اتوار کو اسلام آباد میں ملک کی تمام اپوزیشن پارٹیوں کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے