منگل , 13 اپریل 2021
ensdur

شہزاد اکبر کے بھائی مراد اکبر پر جی ٹی روڈ مندرہ کی ایک فلور مل کی زمین پر قبضے کا الزام ہے ۔

زمین کے اصلی مالک ملک منیر اسلام آباد میں قتل ہونے والے بیرسٹر ملک فہد کے دادا ہیں جبکہ بیرسٹر ملک فہد وفاقی وزیر محمد میاں سومرو کے بھانجے ہیں۔
مراد اکبر زمین پر قبضے کےلیے 30 افراد اور تعمیراتی سامان ساتھ لائے اور فلور مل کی زمین پر دیواریں کھڑی کرنے کی کوشش کی،جس پر زمین کے مالک کے ملازم اور سیکیورٹی گارڈز نے پولیس بلالی۔
پولیس نے قبضہ مافیا کو زمین پر باؤنڈری وال بنانے اور غیر قانونی قبضے سے روکا ،واقعے کے بعدایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو رضوان قدیر نے جائے وقوع کا معائنہ کیا۔
ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو نے کاغذات کا جائزہ لینے کے بعد شہزاد اکبر کے بھائی کے خلاف فیصلہ سنایا ،اے ڈی سی آر کی رپورٹ پر معاون خصوصی مبینہ طور پر ناراض ہوگئے۔
وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزاد اکبر نے مبینہ طور پر عہدے کا غلط استعمال کرکے ریونیو آفس راولپنڈی پر دباؤ ڈالا۔
چند سال قبل مراد اکبر نے اراضی کی تقسیم کا دعویٰ کیا تھا ،ان کی درخواست اُس وقت کا ریونیو عملہ مسترد کرچکا ہے، شہزاد اکبر کے بھائی نے ایک سال قبل دوبارہ درخواست دی اور مبینہ طور پر دباؤ ڈلواکر اپنے حق میں فیصلہ کروالیا۔
گوجر خان کے قریبی گاؤں کی 10 کنال اراضی ملک منیر نے 23سال قبل خریدی تھی ،اراضی کے حوالے سے عدالت میں فیملی کے درمیان تقسیم کا معاملہ بھی زیر سماعت ہے۔
لاہور ہائی کورٹ نے 2012ء میں اس اراضی پر حکم امتناع جاری کیا ،حکم امتناع کے باوجود شہزاد اکبر کے بھائی نے اراضی پر قبضے کی کوشش کی ،جس کے بعد معاملہ مزید گرم ہوگیا۔
ذرائع کے مطابق قبضے کے دوران زمین پر میاں محمد سومرو کی سرکاری گاڑیاں بندے لے کر پہنچ گئیں، پولیس بروقت پہنچی اور دونوں پارٹیوں کو تھانے لے گئی ۔
معاملے کی وجوہات رپورٹ کرنے والے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو راولپنڈی فارغ کردیے گئے،ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کو بھی ہٹادیا گیااور اے ایس پی مندرہ بھی تبدیل ہوگئے ،نئے ڈی سی راولپنڈی انوارالحق نے چارج سنبھال لیا ہے۔
ذرائع کے مطابق مشیر احتساب نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کی رپورٹ پر کمشنر اور ڈی سی کو وزیراعظم آفس طلب کیا اور دونوں افسران کو جھاڑا۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

پیپلزپارٹی نے پی ڈی ایم عہدوں سے استعفے مولانا فضل الرحمن کو بھجوا دیئے

پیپلز پارٹی نے اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم سے علیحدگی کے فیصلے پر مرحلہ وار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے