ہفتہ , 8 اگست 2020
ensdur

زرتاج گل نے’’حصہ‘‘ نہ ملنے پر ڈی جی خان بار کا چیک ڈس آنرکروادیا، صدر ڈی جی خان بار کونسل کا الزام

ڈیرہ غازی خان بار کونسل کے صدر نسیم کھوسہ نے الزام عائد کیا ہے کہ وفاقی وزارت قانون کی طرف سے ڈیرہ غازی خان بار کو ملنے والی بیس لاکھ روپے کی گرانٹ میں سے وزیر ماحولیات زرتاج گل اور ان کے خاوند عظمت نے دس لاکھ روپے رشوت طلب کی اور رقم نہ ملنے پر چیک کو ڈس آنر کرا دیا۔

نسیم کھوسہ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ وزارت قانون نے 30 جون کو انہیں ڈسٹرکٹ بار ڈیرہ غازی خان کے لئے بیس لاکھ روپے کی گرانٹ کا چیک دیا۔ چیک دینے کی تقریب میں زرتاج گل اور ان کے خاوند عظمت بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ وزیر زرتاج گل کے خاوند کی موجودگی پر ہمیں کوئی مسئلہ نہیں تھا مگر وہ تصاویر بناتے وقت چیک پر ہاتھ رکھے کھڑے تھے۔ نسیم کھوسہ نے مزید بتایا کہ تقریب ختم ہونے کے بعد جب وہ جانے لگے تو وزیر مملکت زرتاج گل کے خاوند عظمت نے پیچھے سے ان کے کندھے پر ہاتھ رکھا اور کہا کہ اس رقم میں سے آدھا حصہ ان کا ہے۔ جس پر بار نے انہیں ‘حصہ’ دینے سے انکار کردیا۔

نسیم کھوسہ نے بتایا کہ چیک جمع کرانے کے بعد وہ اپنے ساتھیوں سمیت ڈی جی خان کے لئے روانہ ہو گئے اور جب فیصل آباد کے قریب پہنچے تو انہیں نجی بینک کے منیجر کا فون آیا کہ چیک کیش نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے وجہ پوچھی تو منیجر نے بتایا کہ زرتاج گل نے چیک کو کیش کرنے سے روکا ہے، ساتھ وزارت قانون کی طرف سے بھی ایک خط بھیجا ہے۔ نسیم کھوسہ نے کہا کہ ہم بار کے ساتھ بھرپور احتجاج کا حق رکھتے ہیں۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

مغل اعظم اور پانچ اگست | وسعت اللہ خان

تحریر: وسعت اللہ خان اس پانچ اگست کو بابری مسجد کے ملبے پر رام مندر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے