پیر , 30 نومبر 2020
ensdur

“اُمیدِ سحر بلاول بھٹو” | رضا مری

تحریر: رضا مری

27 دسمبر 2007 کو پاکستان کی سیاسی تاریخ کا سیاہ ترین دن سمجھتے ہیں، جن عالمی قوتوں نے زُلفی بھٹو کی نہتی بیٹی محترمہ بے نظیر بھٹو کو شہید کرکے یہ سمجھا کہ شاید سفر زُلفی بھٹو شہادتِ بینظیر سے اختتام پذیر ہوا لیکن ان انجام سے بےخبر نافھم قوتوں کو یہ علم نہیں تھا کہ پیپلزپارٹی ایک ادارہ ہے جس نے ہر دور میں ایک مظبوط سیاسی، سماجی، مذہبی بصیرت سے سرشارلیڈرشپ کو جنم دیا ہے، بلاول بھٹو صاحب نے اپنی والدہ محترمہ بینظیر بھٹو صاحبہ کی شہادت کے بعد جب سے پاکستان پیپلزپارٹی کی قیادت کے طور پر ذمہ داری سنبھالی ہے تب سے آج تلک مسلسل انتھک جدوجهد کیئے جارہے ہیں اور گلگت بلتستان کے الیکشن کے لئے کٹھن راستوں پر رات کے اندھیرے میں مسلسل جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں۔

صرف پاکستان کے غریب مظلوموں محکموں کے حقوق کی خاطر اب جبکہ موجودہ اناڑی حکومت کی غلط پالیسیوں نااہلی کی وجہ سے ملک بےتحاشا مشکلات سے دوچار ہے ملک کو بچانے اور ہماری آئندہ آنے والی نسلوں کی بقا کی خاطر بلاول بھٹو صاحب کا ساتھ دینا ھوگا موجودہ حالات میں “بلاول آئےگاروزگار لائےگا”۔

ملک کے ہر اس مظلوم کی زبان پر ہے جو اس وقت دو وقت کی روٹی کے لیے پریشان ہے، موجودہ حکومتی بینچوں میں کوئی بھی سنجیدہ اور باوقار شخصیت نہیں ہے، عمران خان اسیمبلی میمبروں بشمول انکے ترجمانوں کو مضحکہ خیز گفتگو اور دوسروں کا مذاق اڑانے کے علاوہ کچھ نہیں آتا۔ ان بھائیوں کو کوئی بتائے کہ یہ ایٹمی طاقت اسلامی جمہوریہ پاکستان ہے اور دنیا کی نظریں پاکستان پر ہیں کوئی سیاسی تھیٹر نہیں ہے۔ لہٰذہ غیر سنجیدہ رویوں اور گفتگو سے گریز کریں، آپکی وجہ سے ملک کا مذاق اڑایا جارہا ہے، پاکستان کا ہر شہری بیروزگاری، لوڈشیڈنگ، مہنگائی، بھوک و افلاس سے تنگ آچکا ہے اب عوام اس فرسودہ نظام سے نجات چاہتاہے۔ اس وقت پاکستان کے عوام کی نظریں پیپلزپارٹی اور بھٹو کے نواسے جناب بلاول بھٹو پر ٹکی ہوئی ہیں عوام سمجھتے ہیں کہ پیپلزپارٹی ہی پاکستان کو ان مشکلات سے نکال سکتی ہے۔

تعارف Editor

یہ بھی چیک کریں

سابق وزیراعظم میر ظفراللہ خان جمالی راولپنڈی میں انتقال کرگئے

سابق وزیراعظم پاکستان میر ظفراللہ خان جمالی انتقال کرگئے۔ میر ظفراللہ خان جمالی دل کے …

ایک تبصرہ

  1. اۓ کاش ہمارا شمار بہی ان اقوام مین ہو جو اپنیۓ جوہر نایاب قیادت کو پہچان سکۓ ورنہ اپنا تو یہ حال ہۓ کہ اپننۓ ہیرون جیسۓ قیمتی افراد خاک کی نظر کر دیۓ ۔ اللہ ہمارۓ حال پر رحم کی نظر کرۓ ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے